سینیٹ نے انسداد دہشت گردی ایکٹ (ترمیمی) بل 2020 پاس کیا

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin


سینیٹ نے جمعرات کو انسداد دہشت گردی ایکٹ (ترمیمی) بل ، 2020 منظور کیا ، جس کے تحت ملک کو گرے لسٹ سے نکالنے کے لئے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) کی کچھ ضروریات کو پورا کرنا ہوگا۔

اس سے قبل یہ قانون سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے قانون و انصاف نے منظور کیا تھا۔

سینیٹر جاوید عباسی کی زیرصدارت اجلاس کے دوران ، کمیٹی کو حکومتی نمائندوں کے ذریعہ بتایا گیا کہ بل میں تمام ترامیم ایف اے ٹی ایف کے مطالبات ہیں۔

جس پر کمیٹی نے حکومتی نمائندوں سے عالمی نگران حکومت کے مطالبات کی ایک کاپی موڑنے کو کہا۔

اقوام متحدہ کے سکیورٹی بل پر کمیٹی ممبروں کو بریفنگ دیتے ہوئے اسپیشل سکریٹری نے کہا کہ ایشیاء پیسیفک اور ایف اے ٹی ایف صورتحال کی نگرانی کر رہے ہیں اور سمجھتے ہیں کہ ملکی قانون میں کچھ تبدیلیوں کی ضرورت ہے۔

تفصیلات کے مطابق ، دونوں بل سینیٹ کے چیئرمین صادق سنجرانی کی زیر صدارت اجلاس میں شق وار منظوری دیئے گئے۔

قومی اسمبلی نے بدھ کے روز ملک کو گرے لسٹ سے دور کرنے کے لئے انسداد دہشت گردی (ترمیمی) بل 2020 منظور کیا۔

ایوان سے خطاب کے دوران وزیرقانون فروغو نسیم نے کہا تھا کہ ایک ذمہ دار قومی ریاست ہونے کے ناطے پاکستان کو بین الاقوامی عدالت انصاف کے فیصلوں اور ایف اے ٹی ایف کی ضروریات کو ماننا ہوگا۔





Source link

Leave a Replay

Sign up for our Newsletter