شدید بارش کے بعد جاری ریڈ الرٹ کی وجہ سے ممبئی میں سفر انتشار پھیل گیا

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin


ہندوستانی شہر ممبئی میں حکام نے منگل کے روز ایک ریڈ الرٹ جاری کیا اور لوگوں کو متنبہ کیا کہ مالیاتی مرکز میں رات بھر ہونے والی شدید بارش کے بعد سیلاب اور سفر کی افراتفری پھیل گئی۔

ہندوستان کے محکمہ موسمیات محکمہ (آئی ایم ڈی) کے عہدیدار کے ایس ہوسالیکر نے بتایا کہ کچھ نواحی علاقوں میں 24 گھنٹوں سے منگل کی صبح تک 300 ملی میٹر (12 انچ) سے زیادہ بارش دیکھی گئی ہے اور اگلے دو دن میں مزید تیز بارش متوقع ہے۔

محکمہ نے اگلے دو دن کے لئے شہر کے لئے ریڈ الرٹ جاری کیا ، اور شہری حکام نے لوگوں کو مشورہ دیا کہ جب تک کہ وہ بالکل ضروری نہ ہو تب تک وہاں سے باہر نہ جائیں۔

ٹرینوں ، جو پہلے ہی ناول کورونا وائرس لاک ڈاؤن کی وجہ سے کنکال خدمات انجام دے رہی ہیں ، سیلاب کی وجہ سے متعدد جگہوں پر معطل ہوگئی تھی اور شہر کی کچھ اہم سڑکوں پر ٹریفک درہم برہم ہوگیا تھا۔

ذرائع ابلاغ کی خبروں میں بتایا گیا کہ شمالی نواحی علاقہ میں ایک مین روڈ پر لینڈ سلائیڈنگ ایک ڈھلان سے بہہ گئی۔

ایک نمائندہ نے کہا ، ممبئی کے ہوائی اڈے پر ہونے والی کارروائیوں پر کوئی اثر نہیں ہوا اس کے علاوہ مرئیت کا نظارہ بھی کم ہے۔

یہ شہر ہر سال مون سون کی بارشوں سے نبردآزما ہوتا ہے کیونکہ وسیع پیمانے پر تعمیرات اور کچرے سے بھری ہوئی نالیوں اور آبی گزرگاہوں سے سیلاب کا خطرہ بڑھتا جارہا ہے۔

ممبئی میں بھی ایک بڑھتے ہوئے کورونا وائرس پھیلنے کی وجہ سے جدوجہد کی جارہی ہے اور ہر روز اوسطا 1،000 1000 نئے کیسز رپورٹ کیے جارہے ہیں۔

ممبئی میں مون سون کی موسلا دھار بارش کے دوران سیلاب زدہ سڑک کو عبور کرنے والے مسافر کمر گہرے پانی میں لہراتے ہیں [Indranil Mukherjee/AFP]

ذریعہ:
خبر رساں ادارے روئٹرز

    .



Source link

Leave a Replay

Sign up for our Newsletter