ڈی جی آئی ایس پی آر کا بیان آئین وقانون کے عین مطابق ہے، وزیرخارجہ #racepknews #racedotpk

Share on facebook
Share on google
Share on twitter
Share on linkedin


اسلام آباد: وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ ڈی جی آئی ایس پی آر کا بیان آئین وقانون کے عین مطابق ہے ، اپوزیشن کے پاس شواہد ہیں تو سامنے لائے ، قیاس آرائیوں کی بنیاد پر تضحیک ملکی مفاد کونقصان پہنچانے کے مترادف ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے پی ڈی ایم کی احتجاجی سیاست پر اہم بیان میں کہا ہے کہ ڈی جی آئی ایس پی آر کا بیان آئین وقانون کے عین مطابق ہے، وہ واضح کر چکے ہیں کہ پاک فوج آئینی کردار ادا کررہی ہے، وہ درست کہہ رہے ہیں انکی ذمہ داریوں میں بےپناہ اضافہ ہوچکاہے۔

وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ 14 نومبر 2020 کو جو ہم نے ڈوزئیر دنیا کے سامنے رکھا ، ڈوزیئرمیں ان قوتوں کیخلاف شواہد ہیں جو عدم استحکام چاہتے ہیں ، کچھ بیرونی قوتیں افغان سرزمین سےدہشتگردی کی پشت پناہی کررہی ہیں۔
شاہ محمود قریشی نے کہا کہ یواین مانیٹرنگ ٹیم رپورٹ نےپاکستان کےمؤقف کی تائید کردی، ای یو ڈس انفولیب رپورٹ نے بھارت کو بے نقاب کر دیا۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ افغان امن عمل نازک مرحلے میں داخل ہو چکا ہے ، مشرقی سرحد پر بار بار ایل اوسی کی خلاف ورزیاں ہو رہی ہیں ، ہماری پوسٹس ، جوانوں اور عام شہریوں کو نشانہ بنایا جاتا ہے۔

بھارت کے حوالے سے وزیرخارجہ نے کہا اس وقت بھارت کا اصلی چہرہ دنیا کے سامنے آ چکا ہے ، جوقوتیں انتشارپھیلارہی ہیں وہ ملک کےمفادت کاتحفظ نہیں کررہیں ، مظفرآباد میں یہ کہنا کشمیر کا سودا کر دیا گیا کتنی غیر ذمہ دارانہ گفتگو ہے، پاکستان میں انتشار پھیلانے کا فائدہ بھارت کو ہوگا۔

اپوزیشن سے متعلق شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ پی ڈی ایم پاکستان کےمفادات کوسامنے رکھے، ہم نےاسپیکرکی سربراہی میں پی ڈی ایم سےکئی ملاقاتیں کیں، اپوزیشن جان بوجھ کراداروں ،شخصیات کو متنازع بناناچاہتی ہے ، اپوزیشن کے پاس شواہد ہیں تو سامنے لائے ، قیاس آرائیوں کی بنیادپرتضحیک ملکی مفاد کونقصان پہنچانےکےمترادف ہے۔

Comments





Source link

Leave a Replay

Sign up for our Newsletter

%d bloggers like this: